Hindusthan Samachar
Banner 2 रविवार, अप्रैल 21, 2019 | समय 07:39 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

میں مذہب کے نام سے سیاست سے بہتر شکست پسند کروں گا : طارق انور

By HindusthanSamachar | Publish Date: Apr 17 2019 7:24PM
میں مذہب کے نام سے سیاست سے بہتر شکست پسند کروں گا : طارق انور
کٹیہار17اپریل(ہ س)۔ کٹیہار لوک سبھا سے کانگریس کے ٹکٹ پر الیکشن لڑ رہے پارٹی کے سینئر لیڈر، لوک سبھا سے ممبر پارلیمنٹ اور سابق وزیر حکومت ہند طارق انور نے مذہب (ہندو مسلم) کے نام پر سیاست کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ مذہب کے نام پر سیاست شرمناک ہے اوریہ آئین سازوں کے خوابوں کا خون ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گاندھی جی اور پنڈت نہرو سے لے کر امبیڈکر پٹیل مولانا آزاد اور شاستری جی سمیت تمام کانگریس کے لیڈروں نے کبھی بھی مذہب کے نام پر سیاست نہیں کی۔طارق انور نے کانگریس پارٹی کے رہنما نوجوت سنگھ سدھو کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے سخت الفاظ میں کہاکہ اس طرح کا بیان شرمناک اور افسوسناک ہے ۔انہوں نے کہا کہ سدھو کو ایسا کوئی بیان نہیں دینا چاہیے جس میں مذہب کے نام پر سیاست کی بو آتی ہو۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کے بیانات سے کانگریس پارٹی اور ملک کی جمہوریت کو نقصان پہنچے گا۔انہوں نے کہا کہ میں ایسی کامیابی سے بہتر شکست سمجھوں گا، جس میں مذہب کے نام پر سیاست شامل ہو۔ طارق انور نے کہا کہ میں نے اپنے سیاسی زندگی کے 40-45 سالوں میں کبھی بھی مذہب کے نام پر سیاست نہیں کی اور یہی وجہ ہے کہ مجھے تمام مذاہب کا احترام برابر ملا اور آج بھی مل رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ میں مذہب کے نام پر سیاست ہرگز نہیں کرنا چاہتا۔طارق انور نے کہا کہ میں نے اپنی سیاسی زندگی میں ہمیشہ تمام مذاہب کو ساتھ لے کر چلنے کا کام کیا ہے اور آج ہندوستان کے کونے کونے میں اگر میری شناخت ہے تو ایک ایسے سیکولر لیڈر کی ہے جو تمام مذاہب کا احترام کرتا ہے۔ طارق انور نے مزید کہا کہ کانگریس پارٹی نے ہمیشہ ہی تمام مذاہب کے ساتھ کام کیا ہے اور ملک کی تعمیر کے لئے کام کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ گاندھی جی پنڈت نہرو سے لے کر امبیڈکر پٹیل آزاد لال بہادر شاستری تمام کانگریس کے ایسے لیڈر ہیں جن کا تعلق مختلف کمیونٹی اور الگ ذات اور برادری سے تھا ، لیکن کانگریس نے سب کو ایک گلدستے میں پرویا ہے اور سب کو لے کر کے کانگریس آگے بڑھی ہے ۔طارق انور نے مزید کہا کہ کانگریس پارٹی نے ہمیشہ ایک ہی پلیٹ فارم پر تمام مذاہب کے لوگوں کو لانے کا کام کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف کانگریس نے نوجوانوں اورجوانوں کے بارے میں بات کی ہے،تو دوسری جانب کانگریس کسانوں اور بےروزگاروں کے بارے میں بات کرتی ہے، جس میں تمام مذاہب کے لوگ آتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی اگر خواتین کے بارے میں بات کرتی ہے، تو کانگریس پارٹی لڑکیوں کی تعلیم کے بارے میں بھی بات کرتی ہے ۔ غریبوں کے لئے اگر منریگا کی بات کرتی ہے تو غربت کے خاتمے کے لئے نیائے جیسی اسکیم لے کر آتی ہے۔انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی معاشرے کے ہر حصے کو بااختیار بنانے کے لئے پرعزم ہے۔انہوں نے کہا کہ ہماری ملک کے تمام لیڈروں سے ہاتھ جوڑ کے اپیل ہے کہ وہ مذہب کے نام پر سیاست نہ کریں، کیونکہ مذہب کے نام پر کی جانے والی سیاست ہمارے ملک کی آزادی کے لئے قربانی دینے والے لوگوں کے ارمانوں کا خون ہو گی۔انہوں نے کہا کہ آزادی کے متوالوں نے کبھی مذہب کے نام پر سیاست نہیں کی تھی اور نہ ہی اس کی کوئی تاریخ ہے، لہذا ہم سیاسی لیڈران سے درخواست کرتے ہیں کہ سیاست میں مذہب کو نہ لائیں ۔ ہندوستھان سماچار#محمدخان
लोकप्रिय खबरें
फोटो और वीडियो गैलरी
image