Hindusthan Samachar
Banner 2 रविवार, अप्रैल 21, 2019 | समय 07:38 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

کمل ناتھ کے ذریعہ وزیراعظم کو ٹوکنے پرشیوراج شدید برہم

By HindusthanSamachar | Publish Date: Apr 17 2019 6:55PM
کمل ناتھ کے ذریعہ وزیراعظم کو ٹوکنے پرشیوراج شدید برہم
کہا’آپ کو صرف چھندواڑہ کے نہیں ہے بلکہ پورے مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ ہیں‘ بھوپال، 17 اپریل (ہ س)۔ ملک بھر میں خراب موسم کی وجہ سے آندھی طوفان سے متاثر ہوئی معمولات زندگی پر سیاسی جماعتوں کے درمیان ٹوئٹر پر جنگ چھڑ گئی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی طرف سے صرف گجرات کے لئے کئے گئے ٹویٹس لے کر مدھیہ پردیش میں کانگریس اور وزیر اعلیٰ کمل ناتھ نے وزیر اعظم کو گھیرنا شروع کر دیا۔ اب اس گھمسان میں مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلیٰ اور بی جے پی کے قومی نائب صدر شیوراج سنگھ چوہان بھی کود پڑے اورانہوں نے وزیر اعظم کا دفاع کیا ہے۔ شیوراج سنگھ چوہان نے بھی ٹویٹ کر کے کمل ناتھ کو یاد دلایا ہے کہ وہ صرف چھندواڑہ کے وزیر اعلیٰ نہیں ہیں بلکہ پورے مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ ہیں۔ شیوراج نے یہ بھی کہا کہ ریاست میں کوئی بھی آفت آتی ہے تو شہریوں کی مدد کرنے کا پہلا فرض وزیر اعلیٰ کا ہوتا ہے۔ شیوراج سنگھ چوہان نے کمل ناتھ پر طنز کرتے ہوئے ٹویٹ کیا کہ آپ کو یہ یاد دلانا ضروری ہوگا کہ آپ بھی پوری ریاست کے وزیر اعلیٰ ہیں نہ کہ صرف چھندواڑا کے! چاروں طرف افراتفری مچی ہے اور آپ کی توجہ صرف اپنے بیٹے کے انتخابات پر مرکوز ہے۔ آپ سے اپیل ہے کہ عوام نے آپ پر جو یقین ظاہر کیا ہے، کم از کم اس کی لاج رکھیں، اپنی ذمہ داری ادا کریں۔ انہوں نے کہا کہ ’صرف ٹویٹ کر دینے سے آپ کا فرض پورا نہیں ہوگا۔ اعلی حکام کی ذمہ داری ہے کہ وہ فوری طور پر مدد کیلئے مرکز سے درخواست کریں۔ آپ کسان کے مفاد کیلئے کام کرتے تو کسان سمان فنڈا سکیم کا فائدہ اٹھانے والوں کی فہرست بھیجتے لیکن بی جے پی کو سیاسی فائدہ نہ ملے، ایسا سوچ کر آپ نے وہ فہرست نہیں بھیجی۔ شیوراج سنگھ چوہان نے کمل ناتھ پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا کہ کمل ناتھ جی، وزیر اعظم نے آندھی-طوفان سے متاثر لوگوں کے لیے امدادی رقم دینے کی منظوری فوراً دی ہے۔ریاست میں کوئی بھی آفت آتی ہے تو شہریوں کی مدد کرنے کا پہلا فرض وزیر اعلیٰ کا ہوتا ہے لیکن مدھیہ پردیش میں جس طریقے سے آپ کی حکومت چل رہی ہے، یہ توسب جانتے ہیں۔ سابق وزیر اعلیٰ نے اپنے دور کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ ’جب میں وزیر اعلیٰ تھا تو ایسی صورت میں انتظامیہ کو چین کی نیند نہیں لینے دیتا تھا، فوری طور پر عوام کے درمیان جاکر شہریوں کی مسائل سنتا تھا اور ان کو ختم کرنے میں لگ جاتا تھا، لیکن آپ تو تبادلے کرنے سے فرصت ہی کہاں جو آپ عام عوام سے جڑے معاملے پر غور کریں۔ ہندوستھان سماچار#محمدخان
लोकप्रिय खबरें
फोटो और वीडियो गैलरी
image