Hindusthan Samachar
Banner 2 सोमवार, दिसम्बर 10, 2018 | समय 03:29 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

اپوزیشن جماعتوں کے اجلاس میں بی جے پی حکومت کو اکھاڑپھینکنے کی حکمت عملی پر ہوگا غور: شرد یادو

By HindusthanSamachar | Publish Date: Dec 8 2018 9:30PM
اپوزیشن جماعتوں کے اجلاس میں بی جے پی حکومت کو اکھاڑپھینکنے کی حکمت عملی پر ہوگا غور: شرد یادو
رانچی، 08 دسمبر (ہ س)۔ لوکتانترک جنتادل کے قومی صدر اور سابق مرکزی وزیر شرد یادو نے 10 دسمبر کو دہلی میں ہونے والی اپوزیشن جماعتوں کے اجلاس کو اہم بتایا اور کہا کہ اس میں آئندہ لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی حکومت کا تختہ الٹنے کی حکمت عملی بنائی جائے گی۔ شرد یادو نے ہفتہ کوریمس میں آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد یادو سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے بات چیت کر رہے تھے۔ انہوں نے لالو کی صحت کو پہلے سے بہتر بتایا۔ انہوں نے کہا کہ حال ہی میں جتنے بھی ریاستوں میں اسمبلی انتخابات ہوئے ہیں، لوگوں نے مرکزی حکومت کے خلاف ووٹ دیا ہے۔ اب عوام بی جے پی کے جملوں میں الجھنے والی نہیں ہیں۔ یادو نے کہا کہ راجستھان، چھتیس گڑھ اور مدھیہ پردیش میں ساڑھے چار سال تک جیسے یہ حکومت چلی ہے، کسان، تاجر سمیت ہر طبقے نے بی جے پی کے خلاف ووٹ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تین چار ریاستوں میں بڑی تبدیلی آئے گی۔ بی جے پی نے انتخابات سے قبل جتنے بھی وعدے کئے ان میںسے ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا۔ بی جے پی نے کہا تھا کہ نوجوانوں کو روزگار دیں گے، کسان کو لاگت کا ڈیڑھ گنا دام دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ یہ صرف اس میں ہی لگے رہے کہ کس طرح بھارت کے عوام میں پھوٹ پڑے۔ لالو سے ملاقات کے بارے میں پوچھنے پر انہوں نے کہا کہ ان سے موجودہ سیاست پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ اپوزیشن پارٹیوں کواکٹھا کرکے بی جے پی کو باہر کریں گے۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میںلوک تانترک جنتا دل اور آرایل ایس پی کے ضم کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ابھی اس بارے میں بات نہیں ہوئی ہے۔ مستقبل میں کیا ہو گا یہ بتانا ابھی مشکل ہے۔ پانچ ریاستوں کے آ رہے ایگزٹ پول پر انہوں نے کہا کہ اس میں کانگریس آگے ہے۔ شرد یادو ہفتے کی صبح رانچی پہنچے تھے۔ اس کے بعد وہ ریمس میںزیرعلاج لالو یادو سے ملے اور ان کا حال چال لیا۔ لالو اور شرد یادوکے درمیان تقریباً ڈیڑھ گھنٹے تک سیاست پر بات چیت ہوئی۔ ہندوستھان سماچار#محمد خان
image