Hindusthan Samachar
Banner 2 रविवार, नवम्बर 18, 2018 | समय 07:52 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

ترقیاتی منظر نامے کو آگے لے جانے کیلئے رقومات کی کوئی کمی نہیں

By HindusthanSamachar | Publish Date: Nov 10 2018 7:59PM
ترقیاتی منظر نامے کو آگے لے جانے کیلئے رقومات کی کوئی کمی نہیں
جموں 10 نومبر(ہ س)۔ چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم نے یہ بات واضح کر دی ہے کہ ریاست کے ترقیاتی منظر نامے کو معیار کی بلندیوں تک لے جانے کے لئے رقومات کی کمی کو آڑے نہیں آنے دیا جائے گا۔ریاستی اور مرکزی سرکاروں کے اعلیٰ افسروں کی ایک مشترکہ میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے چیف سیکرٹری نے کہا کہ رقومات کو بروقت صرف کرنے اور یوٹیلائزیشن سرٹیفکیٹ وقت پر داخل کرنے سے رقومات کی فراہمی میں معقولیت آئے گی۔ مرکزی سرکار کے افسروں کی ٹیم جو اس موقعہ پر موجود تھی اُن میں ایڈیشنل سیکرٹری مرکزی وزارت برائے داخلہ( جموں وکشمیر) گیانیش کمار، جوائنٹ سیکرٹری محکمہ تعلیم مرکزی وزارت فروغ انسانی وسائل منیش گرگ، ایم ڈی و سی ای او نیشنل سکلز ڈیولپمنٹ کارپوریشن میش کمار، جوائنٹ سیکرٹری وزارت اطلاعات و نشریات انجو نگم اور کئی دیگر افسران شامل تھے۔چیف سیکرٹری نے کہا کہ مرکزی حکومت ریاست کے لئے معقول وسائل دستیاب کرانے کے لئے ایک قدم آگے بڑھنے کے لئے تیار ہے تا کہ جموں وکشمیر کی سماجی و اقتصادی سرگرمیوں کو دوام بخشا جاسکے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے یہ رقومات موثر انداز سے معیاد بند مدت میں خرچ کرنے کی صلاحیت اور چاہ ہونی چاہئے۔انہوں نے کہا کہ اس سال23 اکتوبر کو مرکزی وزیر داخلہ کے دورہ سرینگر کے بعد مرکزی سرکار کے اعلیٰ افسروں کے گرؤپ لگاتارجموں وکشمیر کا دورہ کر کے ریاستی سرکار کے افسروں کے ساتھ مرکزی معاونت والے پروگراموں اور پروجیکٹوں کی عمل آوری کے تعلق سے پیش رفت کا جائیزہ لیا کریں گے چیف سیکرٹری نے کہا کہ مشتیزہ میٹنگوں میں نہ صرف رکاوٹوں کو دور کرنے اور وسائل کی دستیابی کی طرف توجہ دی جائے گی بلکہ ان معاملات کے بارے میں موقعہ پر ہی فیصلے لینے میں مدد ملے گی اور ان کاموں کے لئے پہلے عرصہ دراز تک انتظار کرنا پڑتا تھا اور ترقیاتی عمل میں رکاوٹیں حائل ہوجاتی تھیں میٹنگ میں جن معاملات پر تبادلہ خیال ہوا اُن میں پی ایم ڈی پی پروجیکٹ، تعلیمی نظام میں ٹیکنالوجی کو بروئے کار لانا، نئے علاقوں میں کیندریہ ودھیالیہ اور جواہر نوودھیا ودھیالہ کھولنا، حمائت، اُڑان اور پردھان منتری کونشل وکاس یوجنا کے تحت ہُنر مندی کی پیش رفت، مائیگرینٹ ملازمین کے لئے رہایش کی تعمیر، دیگر کنبوں کو ریلیف دینا، سرحدوں پر بنکروں کی تعمیر، تشدد کے متاثرین کو مالی معاونت دینا، آئی آر پی میں نئی بھرتی کرنا، خواتین پولیس اور بارڈر پولیس بٹالنیوں میں بھرتی کرنا اور ایس پی اوز کی تعیناتی شامل ہے۔ریاستی حکومت کی طرف سے میٹنگ میں پرنسپل سیکرٹری داخلہ آر کے گوئل، ڈی جی پی ایس دلباغ سنگھ، کمشنر سیکرٹری تعمیرات عامہ خورشید احمد شاہ، ڈویثرنل کمشنر جموں سنجیو ورما، سیکرٹری آر ڈی ڈی شیتل نندہ، ڈائریکٹر سکولی تعلیم اے کے ساہو، سیکرٹری یوتھ سروسز اینڈ سپورٹس و اطلاعات سرمد حفیظ اور کئی دیگر اعلیٰ افسران نے شرکت ۔ ہندوستھان سماچار/اصغر/بلوان؍محمد شہزاد
image