Hindusthan Samachar
Banner 2 सोमवार, नवम्बर 19, 2018 | समय 00:27 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

بی جے پی نے ہرطبقہ کو متوجہ کرتے ہوئے جاری کیا اپنا انتخابی منشور

By HindusthanSamachar | Publish Date: Nov 10 2018 7:52PM
بی جے پی نے ہرطبقہ کو متوجہ کرتے ہوئے جاری کیا اپنا انتخابی منشور
چھتیس گڑھ کو ترقی کی راہ پر لے جانا ہمارا قرارداد: شاہ رائے پور، 10 نومبر (ہ س)۔ بھارتیہ جنتا پارٹی نے ہفتہ کے روز اپنا انتخابی منشور جاری کر دیا۔ قومی صدر امت شاہ نے ''اٹل سنکلپ پتر'' جاری کر ترقی کی راہ پر لے کرریاست کو ایک نیا مقام دینے کی بات کہی۔ منشور کے ذریعے شاہ نے کہا کہ 15 سال میں چھتیس گڑھ نے ترقی کا ریکارڈ رچا ہے۔ خاص طور پر اس دوران سب سے بڑی کامیابی نکسل ازم پر نکیل کسنے کو لے کر رہی ہے۔ شاہ نے کہا کہ 15 سال میں ریاست پاور ہب بنا ہے، سیمنٹ ہب بنا ہے، اسٹیل ہب بنا ہے اور اب ڈیجیٹل ہب بننے کی سمت میں رمن سنگھ آگے بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے ایک بار پھر کہا، چھتیس گڑھ میں اس بار منی کنچن یوگ ہے، مرکز میں نریندر مودی کی حکومت ہے اور چھتیس گڑھ میں رمن سنگھ کی حکومت ہے۔ انہوںنے یقین ظاہر کیا کہ چوتھی بار بھی ریاست میں بی جے پی کی حکومت آئے گی۔ قومی صدر نے کہا، دوسری جماعتوں کے لئے یہ انتخابات حالانکہ ہار جیت کے انتخابات ہوں، لیکن بی جے پی کے لیے یہ انتخابات نوا چھتیس گڑھ کی تعمیر کا الیکشن ہے۔ ایک اعداد و شمار کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا، جب دہلی میں یو پی اے کی حکومت تھی تو 13 ویں مالیاتی رپورٹ کے مطابق صرف 48 ہزار 88 کروڑروپے ملا کرتے تھے، جبکہ مرکز میں 2014 میں نریندر مودی کی حکومت بننے کے بعد 14 ویں مالیاتی رپورٹ کے مطابق 1 لاکھ کروڑ سے زیادہ کی رقم دی گئی، جو کافی زیادہ ہے۔ شاہ نے کامیابیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی حکومت نے سوامی ناتھن کمیشن کی سفارشات کو لاگو کرنے کا کام کیا۔ 9 ہزار کروڑ کا بجٹ کانگریس چھوڑ کر گئی تھی، جسے آج بی جے پی کی حکومت نے 83 ہزار کروڑ روپے کیا ہے۔ کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے کہا کہ کانگریس کی حکومت میں صرف کمیشن بننے کا کام ہوتا تھا۔ بے گناہوں کو مارنے میں جس پارٹی کو انقلاب دکھائی پڑتا ہو، وہ پارٹی کبھی بھی چھتیس گڑھ کا بھلا نہیں کر سکتی۔ بی جے پی کی حکومت کو گھروں میں گیس کنکشن پہنچا کر بھلا نظر آتا ہے، ہمیں بچوں کے ہاتھوں میں قلم پکڑانے میں انقلاب نظر آتا ہے۔ ریاست کو پسماندگی سے آزاد کرنے میں انقلاب نظر آتا ہے۔انتخابی منشور پڑھتے ہوئے پارٹی صدر نے بتایا کہ اس میں ہرطبقہ کا خاص خیال رکھا گیا ہے۔ کسانوں، بے روزگار نوجوانوں، خواتین اوربزرگوں کے ساتھ صحت کی خدمات، تعلیم، بہتر نقل و حمل سمیت ماﺅنوازمسئلہ کے حل کی بات کہی۔ اس دوران وزیر اعلی ڈاکٹر رمن سنگھ، پارٹی صدر دھرملال کوشک، وزیر برج موہن اگروال، اجے چندرا کر، راجیش مونت،پریم پرکاش پانڈے، امر اگروال سمیت بی جے پی کے سینئر لیڈر موجود تھے۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ ڈاکٹر رمن سنگھ نے کہا، مختصر زرعی پیداورا امدادی قیمت کو ڈیڑھ گنا بڑھا یاجائے گا۔ بی جے پی نے کسانوں کے ساتھ جڑ کر ان کی ترقی اور تخلیق نو کا کام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر شخص کو رہائش کی خواہش کو بی جے پی پورا کرے گی، جس کے تحت 2022 تک ہر شخص کو پکا رہائشی مکان دینے کی بات منشور میں بی جے پی نے لکھی ہے۔ وہیںطبی خصوصیات کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا، صحت انشورنس اور بہتر بنایا جائے گا، جس کے تحت آیشمان منصوبہ کے تحت 5 لاکھ روپے تک کا بیمہ اور اب صحت کی انشورنس کی 50 ہزار روپے کی رقم کو بڑھا کر 1 لاکھ روپے روپے کیا جائے گا۔ یہ یونیورسل ہیلتھ انشورنس ہوگا جس کا فائدہ سب کو ملے گا۔ وہیں طلباء و طالبات دونوں کے لئے مفت سائیکل دی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ ڈاکٹر رمن نے مزید کہا کہ چھتیس گڑھ میں کانگریس کی حکومت تھی لیکن کبھی بھی انہوں نے کسانوں کے اخراجات کو لے کر سوامی ناتھن کمیشن کی سفارشات کو لاگو نہیں کیا۔ بی جے پی کی ترجیحات میں کسان ہیں.۔طالب علموں کو کتاب-سائیکل مفت ملے گی۔ تاجروں کو 5 لاکھ روپے کا بزنس انشورنس کرایا جائے گا۔ بی جے پی ریاستی صدر دھرم لاک کوشک نے کہا کہ تمام طبقات کو ذہن میں رکھ کر ہم نے منشور بنایا ہے۔ جوگی کے چیلنج پر انہوں نے کہا، وہ لوگ جو چیلنج کر رہے ہیں، یا منشور دیں رہے ہیں انہیں پتہ ہے کہ عوام انہیں مسترد کرنے والی ہے۔ لہٰذا یقین جتنے کے لئے وہ یہ سب کر رہے ہیں۔ وزیر برج موہن اگروال نے کہا کہ بی جے پی چوتھی بار حکومت بنانے والی ہے۔ ہندوستھان سماچار#محمد شہزاد
image