Hindusthan Samachar
Banner 2 रविवार, अक्तूबर 21, 2018 | समय 12:20 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

راہل گاندھی نے’ایچ اے ایل‘ ملازمین سے کی ملاقات

By HindusthanSamachar | Publish Date: Oct 13 2018 9:21PM
راہل گاندھی نے’ایچ اے ایل‘ ملازمین سے کی ملاقات
بنگلور،13اکتوبر( ہ س)۔ رافیل معاہدہ میں مودی حکومت پر لگاتار بدعنوانی کے الزامات عائد کرنے والے کانگریس صدر راہل گاندھی نے 13 اکتوبر کو ہندوستان ایروناٹکس لمیٹڈ (ایچ اے ایل) کے موجودہ اور سابقہ ملازمین سے ملاقات کی۔ اس ملاقات کے دوران بھی انھوں نے مرکزی حکومت پر رافیل معاملہ میں بدعنوانی کا الزام عائد کیا اور کہا کہ ایچ اے ایل کے ساتھ دھوکہ کرتے ہوئے وزیر اعظم نے رافیل کا ٹھیکہ انل امبانی کی کمپنی کو دلایا۔اس ملاقات کے دوران راہل گاندھی نے ہندوستان کے لیے ایچ اے ایل کی کاوشوں کو یاد کیا اور کہا کہ ”ایچ اے ایل کا ہندوستان پر قرض ہے۔ میں اس ادارہ کے ملازمین سے وعدہ کرتا ہوں کہ وہ ہندوستان کی حفاظت کرنے والوں کے وقار کا تحفظ کریں گے۔“ راہل نے ساتھ ہی ایچ اے ایل ملازمین سے یہ بھی کہا کہ ”میں آپ کو سمجھنے کے لیے، آپ کے مسائل کو جاننے کے لیے آیا ہوں۔ میں یہ سمجھنے کے لیے آیا ہوں کہ اسٹریٹجک ملکیت کو ہمارے ملک اور مستقبل کے لیے کس طرح زیادہ اثردار بنایا جا سکتا ہے۔“ اپنی بات چیت کے دوران راہل گاندھی نے ایچ اے ایل کو ہندوستان کی اسٹریٹجک ملکیت قرار دیا اور کہا کہ ”آپ ریگولر کمپنی نہیں ہیں۔ دفاع کرنے اور اس ملک میں ایک سائنسی ماحول بنانے کے لیے آپ جس طرح کام کر رہے ہیں اس کے لیے ملک پر آپ کا قرض ہے۔“ راہل نے مزید کہا کہ ”جب اوباما کہتے ہیں کہ ہندوستان اور چین مستقبل میں اسے چیلنج پیش کر سکتے ہیں تو اس کے پیچھے ایک بڑی وجہ آپ (ایچ اے ایل) ہیں۔“ایچ اے ایل ملازمین کی ملاقات سے قبل کانگریس صدر نے ایک ٹوئٹ بھی کیا تھا۔ انھوں نے اس ٹوئٹ میں لکھا تھا کہ ”ایچ اے ایل ہندوستان کی اسٹرٹیجک ملکیت ہے۔ ایچ اے ایل سے رافیل چھین کر انل امبانی کی کمپنی کو تحفہ میں دینے سے ہندوستان کی ایرو اسپیس انڈسٹری کے مستقبل کو برباد کیا گیا ہے۔“ ہندوستھان سماچار#محمد خان
image