Hindusthan Samachar
Banner 2 गुरुवार, नवम्बर 15, 2018 | समय 18:43 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

ریواڑی اجتماعی عصمت دری معاملہ: ڈاکٹرسمیت دو گرفتار، اہم ملزم ابھی بھی گرفت سے باہر

By HindusthanSamachar | Publish Date: Sep 16 2018 9:01PM
ریواڑی اجتماعی عصمت دری معاملہ: ڈاکٹرسمیت دو گرفتار، اہم ملزم ابھی بھی گرفت سے باہر
چنڈی گڑھ،16ستمبر ( ہ س)۔ ہریانہ کے ریواڑی علاقے میں عصمت دری معاملے میں ایس آئی ٹی کی ٹیم نے طالبہ کے اغوا میں استعمال کی گئی گاڑی کو ضبط کرلیا ہے۔ ٹیم نے متاثرہ کو سب سے اہم دیکھنے والے دیال اپادھیائے اسپتال کے ڈاکٹرکوگرفتارکیا ہے۔اس کےساتھ ہی ریواڑی کی جس جگہ پرطالبہ کےساتھ عصمت دری کی گئی تھی، اس ٹیوب ویل کے مالک کو بھی مجرمانہ سازش کے معاملے کے تحت گرفتار کیا گیا ہے۔ حالانکہ اہم ملزم ابھی تک پولیس کی گرفت سے باہر ہے، جس کی تلاش کے لئے جگہ جگہ چھاپہ ماری چل رہی ہے۔ واضح رہے کہ ہریانہ کے ریواڑی ضلع میں طالبہ کے ساتھ ہوئی اجتماعی آبروریزی کے معاملے میں پولیس نے ایک فوجی اہلکارسمیت تین ملزمین کی تصویریں جاری کی ہیں۔ تینوں ملزمین کے نام پنکج، نشو اورمنیش بتائے جارہے ہیں۔ اس معاملے میں ایس آئی ٹی جانچ کررہی ہے۔ پولیس نے ملزمین کو پکڑوانے میں مدد کرنے والے کو ایک لاکھ روپئے کا اعلان بھی کردیا ہے۔ ایس آئی ٹی انچارج نازنین بھسین نے پریس کانفرنس کرکے ملزمین کے بارے میں اطلاع دینے کی اپیل کی اور انعام دینے کااعلان کیا۔ وہیں انہوں نے بتایا کہ متاثرہ کے اہل خانہ کو سیکورٹی بھی دی جائے گی۔یادرہے کہ ریوارڑی میں تین نوجوانوں نے کوچنگ سینٹر سے گھر لوٹ رہی طالبہ کا مبینہ طور پر اغوا کرکے سنسان علاقے میں اجتماعی آبروریزی کی واردات کو انجام دیا۔ متاثرہ طالبہ صدرجمہوریہ سے سرفراز کی گئی سی بی ایس ای بورڈ کی ٹاپر ہے۔ اس معاملے میں متاثرہ نے پولیس کو بتایا کہ اس کا اغوا کرنے میں تین لوگ شامل تھے۔ وہیں جہاں پر عصمت دریکی واردات کو انجام دیا گیا، وہاں پہلے سے ہی کچھ نوجوان موجود تھے۔ ہندوستھان سماچار#محمد خان
image