Hindusthan Samachar
Banner 2 बुधवार, सितम्बर 26, 2018 | समय 12:12 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

سنگھ سربراہ کی سرگرمی سے سیاسی پارٹیوں کے لیڈر حیران

By HindusthanSamachar | Publish Date: Sep 16 2018 9:02PM
سنگھ سربراہ کی سرگرمی سے سیاسی پارٹیوں کے لیڈر حیران
نئی دہلی،16ستمبر ( ہ س)۔ راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ کے سربراہ موہن بھاگوت کی سرگرمی سے نہ صرف دیگر پارٹیوںکے لیڈران حیران وپریشان ہیں بلکہ بی جے پی کے بھی کئی بڑے لیڈر حیران ہیں۔ وجہ یہ ہے کہ سنگھ سربراہ نے جس طرح ملک اور بیرون ملک کے تمام بڑے اور مختلف نظریہ، مختلف حلقہ کے دانشوروں سے مسلسل صنعت کاروں سے ملنا جلنا ،ان کی سننا اور اپنی بات کہنا، غوروفکر کرنا شروع کیا ہے اس سے سنگھ کے تئیں اس کے سربراہ کے تئیں لوگوں کا نظریہ بدلنے لگا ہے۔ یہ بھی پتہ چلے گا کہ اس کا سیاسی ونگ بی جے پی کس سمت میں جارہی ہے۔ کون لیڈر کیسا ہے اور اپنے حکومت میں بنے رہنے کے لئے کن کن مدعووں پر کس حد تک جاسکتا ہے۔ اس سے مستقبل میں سنگھ کو کتنا نقصان ہوسکتا ہے۔کس پر نکیل لگائی جانی چاہئے، کس کا پر کترنا چاہئے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اس وجہ سے بی جے پی کے بھی کئی ایسے لیڈر جو پارٹی کو اپنی جیب کی پارٹی سمجھنے لگتے ہیں، تشویش میں ہیں۔ لیکن دیگر پارٹیوں خاص کر اپوزیشن پارٹیوں کے لیڈر سنگھ سربراہ کے ملک اور بیرون ممالک کے مختلف حلقوں کے اعلیٰ لیڈروں سے ملاقات سے حیران ہیں۔ اس پر اے آئی سی سی رکن انل شری واستو کا کہنا ہے کہ اتنی بڑی تنظیم کے سربراہ اگر مختلف حلقوں کے تجربہ کار لوگوں سے مل رہے ہیں اور ملک کے لئے کچھ بہتر کرنے کی سوچ رہے ہیں تب تو اچھی بات ہے۔ اس تجربہ سے سماج میں ہم آہنگی بڑھتی ہے اور اس میں روڑہ اٹکانے والے بی جے پی کے کچھ لیڈروں کی کوشش کو بریک لگاتے ہیں، ان پر نکیل لگاتے ہیں، یہ تو بہت اچھی بات ہوگی۔ اس بارے میں سنگھ کے بزرگ کارکن اور وی ایچ پی کے عہدیدار رام کرپال کا کہنا ہے کہ سنگھ کا ملنے جلنے کا پروگرام پہلے سے ہی چلا آرہا ہے جو بھی سنگھ سربراہ ہوتا ہے وہ سماج کے ہر طبقہ کے مانند لوگوں سے ملتا ہے، بات چیت کرتارہتا ہے۔ پہلے بھی ہوتا تھا، اب بھی ہوتا ہے۔ یہ سنگھ میں اوپر سے نیچے تک کے عہدیدار اپنے اپنے حلقہ میں کام کرتے ہیں۔ اس سے سماج میں کیا ہورہا ہے، کس شعبہ میں کیا پریشانیاں ہیں، کیا کمی ہیں، سنگھ میں کس طرح سے اور بہتری کی جاسکتی ہے ان سب تمام مدعووں پر بات چیت باہر اور اندر بھی ہوتی رہتی ہے۔ ہندوستھان سماچار#محمد خان
image