Hindusthan Samachar
Banner 2 शनिवार, नवम्बर 17, 2018 | समय 13:59 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

چھتیس گڑھ کے مسلمانوں نے رام مندر کی تعمیر کے لئے ایک لاکھ سے زیادہ کی رقم دی

By HindusthanSamachar | Publish Date: Sep 16 2018 9:03PM
چھتیس گڑھ کے مسلمانوں نے رام مندر کی تعمیر کے لئے ایک لاکھ سے زیادہ کی رقم دی
نئی دہلی،16ستمبر ( ہ س)۔ فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور بھائی چارے کا بے مثال مظاہرہ چھتیس گڑھ کے مسلمانوں نے اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے لئے ایک لاکھ سے زیادہ رقم دے کر کیا۔ یہ جانکاری مسلم راشٹریہ منچ کے ذریعہ حاصل ہوئی۔ مسلم راشٹریہ منچ کے قومی تنظیمی کنوینر گریش جویال نے آج بتایا کہ تنظیم نے گزشتہ دنوں رام مندر کی تعمیر کے لئے چھتیس گڑھ کے مسلمانوں میں مہم چلائی جو کافی کامیاب رہی۔ اس مہم کے نتیجہ میں چھتیس گڑھ کے عام مسلمانوں نے رام مندر کی تعمیر کے لئے اپنی حیثیت کے مطابق چندہ دیا جو ایک لاکھ گیارہ ہزار تک پہنچا۔ رام مندر کی تعمیر کے لئے چندہ دے کر چھتیس گڑھ کے مسلمانوں نے نہ صرف فرقہ وارنہ ہم آہنگی اور بھائی چارہ کا بے مثال ثبوت پیش کیا بلکہ ملک کے دیگر حصوں کے مسلمانوں کو مہمیز کرنے کا بھی کام کیا ہے۔ رام مندر کی تعمیر کے لئے چندہ دینے والے مسلمانوں کا کہنا ہے کہ چونکہ رام ہمارے ہندو بھائیوں کے لئے پوجیہ ہیں اور اجودھیا کی متنازعہ جگہ ان کی جائے پیدائش ہے اس لئے وہاں رام مندر کی تعمیر ہونی چاہئے اور اس میں ملک کے سبھی فرقوں کو تعاون کرنا چاہئے۔ خصوصاً مسلمانوں کو تاکہ ملک میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی دور کرکے بھائی چارہ کا ماحول بنے۔ چھتیس گڑھ میں مسلم راشٹریہ منچ کے قومی معاون کنوینر سمپت سنگھ، ڈاکٹر سلیم راج اور یونس نے مسلمانوں میں رام مندر کی تعمیر کے لئے رقم جمع کرنے کی مہم مشترکہ طور پر چلائی جبکہ تنظیم کے دیگر عہدیداران مشیر خان، کلیم ملک، اطہر الٰہی خان، یاسر جیلانی، اداسین آشرم کے سربراہ سوامی مادھوانند اور فضل خان اپنے متعدد ساتھیوں کے ساتھ اس طرح کی مہم چلانے میںمصروف ہیں۔ ہندوستھان سماچار#محمد خان
image