Hindusthan Samachar
Banner 2 बुधवार, सितम्बर 26, 2018 | समय 12:39 Hrs(IST) Sonali Sonali Sonali Singh Bisht

مسلمانوں اورہم جنس پرستوں کے خلاف متنازعہ تبصرہ کرنے پر ٹیک مہندرا کی خاتون اعلیٰ افسر برخاست

By HindusthanSamachar | Publish Date: Sep 16 2018 9:00PM
مسلمانوں اورہم جنس پرستوں کے خلاف متنازعہ تبصرہ کرنے پر ٹیک مہندرا کی خاتون اعلیٰ افسر برخاست
نئی دہلی،ممبئی،16ستمبر ( ہ س)۔ اطلاعاتی ٹیکنالوجی کمپنی ٹیک مہندرا نے اپنی ایک خاتون اعلیٰ افسر کو برخاست کردیا ہے۔ کمپنی کی ٹریننگ ڈپارٹمنٹ کی سربراہ نائب صدر سطح کی اس خاتون افسر پر ہم جنسی پرستوں اور مسلم فرقہ کے خلاف متنازعہ تبصرہ کرنے کا الزام عائد کیا گیا تھا، جو کمپنی کی تفتیش میں صحیح پایا گیا۔ اس خاتون افسر پر کمپنی کے ہی ایک سابق نوجوان پروفیشنلس نے الزام لگایا تھا جس پر کمپنی کے چیئرمین آنند مہندرا نے بھروسہ دلوایا تھا کہ وہ پورے معاملے کی جانچ کریں گے۔ ذرائع کے مطابق ٹیک مہندرا کے ڈاﺅرسٹی افسر ریچا گوتم پر کمپنی میں ہی کام کرنے والے ایک نوجوان سابق پروفیشنلس گورو پروبر نے الزام عائد کیا تھا۔ گورو پروبر نے ریچا گوتم کے خلاف ایک طویل خط لکھا جسے بعد میں سوشل میڈیا پر اپلوڈ کردیا گیا، جب یہ شکایت مہندر ا اینڈمہندرا گروپ کے چیئرمین آنند مہندرا تک پہنچی تو انہوں نے پورے معاملے کی جانچ کی یقین دہانی کرائی۔ کمپنی کی جانچ میں ریچا گوتم کو مجرم پایا گیا۔ کمپنی نے بعد میں گورو پروبر کو اطلاع دی کہ ریچا گوتم کو کمپنی کی خدمات سے برخاست کردیا گیا ہے۔ گورو پروبر نے اپنی شکایت میں لکھا تھا کہ ریچا گوتم ٹریننگ کے دوران ہم جنس پرست لوگوں اور مسلمانوں کے خلاف نازیبا تبصرے کرتی تھی۔ ریچا گوتم کی یہ عادت سی ہوگئی تھی۔ وہ مسلمانوں کو پوری دنیا کا سب سے بڑا دکھ کہتی تھیں۔ ہندوستھان سماچار#محمد خان
image